Technology

واٹس ایپ استعمال کرنے والوں کے لیے ایک انتہائی خوشخبری

واٹس ایپ استعمال کرنے والوں کے لیے ایک انتہائی خوشخبری
عموماً ہم لوگ واٹس ایپ کو استعمال کرتے ہیں تو نہ چاہتے ہوئے بھی ہمیں کسی نہ کسی گروپ میں ایڈ کر دیا جاتا ہے
واٹس اپ استعمال کرنے والے صارفین کو انتہائی تکلیف کا سامنا کرنا پڑتا ہے
جب ان کی مرضی کے بغیر کوئی بھی دوست رشتہ دار ان کو کسی واٹس ایپ گروپ میں ایڈ کر دیتا ہے
واٹس ایپ ایپلیکیشن ڈویلپر نے صارفین کی اس پریشانی کو سمجھتے ہوئے ایک نیا فیچر متعارف کروایا ہے جس کے ذریعہ واٹس ایپ یوزر کو کوئی بھی ان کی مرضی کے بغیر کسی بھی واٹس ایپ گروپ میں شامل نہیں کرسکے گا واٹس ایپ ڈویلپر ٹیم اس پر پچھلے ایک سال سے کام کر رہے تھے اور اس کو انہوں نے کچھ عرصہ کے لیے لیے تجرباتی  طور پربھی چیک کیا تھامگر  اس وقت یہ یہ ایپلیکیشن اور اس کا یہ فیچر سے بھارت کے لوگوں کو میسر تھا
 دنیا اور عالمی سطح پر اس کو استعمال نہیں کیا جا رہا تھا
اب ہم یہ بات باآسانی کہہ سکتیں ہیں کہ لوگوں کو جس تکلیف کا سامنا تھا جو ان کو ان کی مرضی کے بغیر کسی بھی واٹس ایپ گروپ میں شامل کردیا جاتا تھا اب نہیں کیا جاسکے گا مزید اس کے ساتھ اسپام میسج میں بھی کمی آئے  گی اور اس سے لوگوں کو بہت حد تک آرام ام ملے گا اور اور اس فیچر کو استعمال کرنے کے لیے واٹس ایپ کے پرائویسی سیکشن میں گروپس کا اضافہ کیا گیا ہے
اس فیچر کو استعمال کرنے کے لیے آپ کو واٹس ایپ میں مینیو کے آپشن پر تھری ڈی کا بٹن دیا جائے گا جس پر کلک کرکے سیٹنگ اوپن کی جائے گی جہاں جا کر اپنا اکاؤنٹ سلیکٹ کریں گے اور وہاں پرائیویسی اور پھر وہاں سے گروپس کے آپشن کا انتخاب کریں گے جہاں آپ کو تین آپشن نظر آئینگے بالکل اسی طرح جس طرح ہم لوگ سٹیٹس پے پے کوئی ویڈیو یا تصویر لگاتے ہیں تاکہ سب لوگ اسے دیکھ نہ سکیں کی
آپ کو تین آپشن میں لیں گے
ایوری ون
مائی کونٹیکس
مائی کونٹیکس ایکسپیکٹ
اینٹینوں فیچر کی استعمال کرنے سے واٹسپ صارف کو بہت آسانی ہوجائے گی جس کی مدد سے وہ لوگ جسے چاہیں گے الاؤ کر سکیں گے کہ وہ ان کو واٹسپ گروپ میں شامل کرلے اور جس کو چاہیں گے وہ بلاک کردیں گے

Hits: 91

admin

Top Trend is all about to provide you information and news alerts ain all fields Top Trending is about trending topics over the world Our expertise is to share trending topic Sports,news,health,entertainment science politics

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button
Close
Close